مقبوضہ کشمیر میں حلف نامے۔

مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی حکومت نے ہزاروں گرفتار نوجوانوں کی رہائی کیلئے مظلوم کشمیری والدین کو بلیک میل کرنا شروع کر دیا ہے ۔ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثت ختم کرنے سے ایک ہفتہ قبل بھارتی فوج نے کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کرنا شروع کر دیا تھا ۔ کرفیو کے نفاذ کے بعد 13 سال سے زیادہ عمر کے کشمیری نوجوانوں کی گرفتاریوں کا عمل بہت تیز کر دیا گیا ۔

بتایا جا رہا ہے کہ 21 ہزار کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کیا گیا اور انہیں مقبوضہ کشمیر کی بجائے بھارت کے مختلف صوبوں کی جیلوں میں منتقل کر دیا گیا ۔ بھارتی فوج کی طرف سے مجبور اور بے بد کشمیری والدین کو حلف نامے دئے جا رہے ہیں کہ وہ اپنے گرفتار بچوں کی رہائی کیلئے ان سے بچوں سے حلف ناموں پر دستخط کرائیں کہ وہ مستقبل میں کسی جلسہ جلوس میں شامل نہیں ہوں گے ۔

گرفتار نوجوانوں سے ضمانت طلب کی جا رہی ہے کہ وہ بھارتی حکومت کے خلاف کوئی بات نہیں کریں گے اور نہ آزادی کا مطالبہ کریں گے ۔

Facebook Comments