نواز شریف کی بیرون ملک روانگی مقتدرہ کی خواہش تھی ۔فاروق احمد

دیکھئے اگر آپ کو یہ بدگمانی ہے کہ بھاگ گیا تو یہ موقع تو اسے روز اول سے حاصل تھا پھر کیوں نہیں بھاگا ۔ وہ تو سزا کاٹنے واپس آیا ۔ کیا آپ نہیں جانتے کہ فوج کی بھرپور کوشش تھی کہ یہ باہر چلا جائے کبھی واپس نہ آئے ۔ یار کوئی تک کی بات کرو ۔ نیم یوتھیے نہ بنو ۔ رہا سوال کہ اب کیوں چلا گیا تو یار فیملی کا بڑا دباؤ ہوتا ہے جب ماں بیٹے کے سامنے ہاتھ جوڑ کر واسطے دے یا بیٹی قدموں سے لپٹ جائے ۔ اب یہ بچپنا روٹھنا چھوڑو ۔ کوئی قیامت نہیں ا گئی اور نہ سویلین سپریمیسی کی لڑائی کو کوئی نقصان ہوا ہے ۔ سویلین سپریمیسی کسی ایک شخص یا حادثے کی محتاج نہیں ہوتی ۔ اگر آپ نواز شریف کی موت کے منتظر تھے تو یہ آپ کی خود غرضی تھی ۔ معاملہ زہر دینے کا تھا یا نہیں تھا لیکن باہر جا کر یہ امکان رول آؤٹ تو ہو جائے گا نا کم از کم ۔ سو باتوں کی ایک بات ۔ اگر آپ کو گمان ہے کہ وہ واپس نہیں آئے گا تو یہ آپ کی خام خیالی ہے ۔ اگر زندہ رہا تو آئے گا اور سازشی فوجی مافیا کے سینے پر مونگ دلے گا ۔ اچھا اگر وہاں بھی طبعیت نہ سنبھلی اور مر گیا تو اس سے تو سویلین کاز کو جلا مل جایے گی نا ۔ تو پھر دعا کریں کہ مر جائے ۔۔

Facebook Comments