اعتراف گناہ وقاص قاسم ۔

عیسائیت کے ایک فرقے ۔رومن کیتھولک میں کنفیشن عبادت کا رکن ہے۔۔ مخصوص اتوار کو ماس سروس کے بعد پادری اپنے ایک جالی دار کیبن میں جا کر اس طرح بیٹھ جاتا ہے کہ اس کے کان جالی کا جانب ہوں اور چہرہ کیبن کی دیوار کی جانب تا کہ اگر کوئی بندہ آ کر بات کرے تو وہ اسکا چہرہ نہ دیکھ سکے۔ا اس عبادت کو کنفیشن کہتے ہیں ۔۔۔کنفیس کرنا۔۔اعتراف جرم کر لینا رومن کیتھولک روایات کے مطابق اگر کوئی شخص پادری کو اپنے گناہ سچے دل سےکنفیس…

نوجوانی میں درویشی ۔ رضا شاہ جیلانی

میں نے کئی بزرگ صوفی ملنگ درویش دیکھے ہیں مگر جن لوگوں پر اللہ کی عطا انکی جوانی میں ہی ہوجائے وہ صوفی ملنگ درویش شاید ہزاروں میں کوئی ایک ہوتا ہے۔ ایسا ہی میں نے ایک درویش آج بھی دیکھا۔۔ کراچی شہر اللہ والے لوگوں سے بھرا پڑا ہے، یہ سچ ہے کہ یہاں کے لوگوں کو اللہ نے نوازا ہے تو لوگ اس ہی انداز سے دل کھول کر بانٹتے بھی ہیں۔ کراچی کے ایک پوش علاقے میں ایک نجی اسپتال ہے جہاں آج میں ایک صاحب کی…

چاچا درگاہی کے اوجڑی پائے ۔ نذیر ڈھوکی

پیرجوگوٹھ میں ایک چاچا درگاہی ہوا کرتا تھا ۔ وہ گھر میں اوجھڑی ،پاٸے اور روٹیاں پکاکر سڑک کے کنارے بیٹھ کر آوازیں لگاتا’ آٹھ آنے میں پیٹ بھر کر کھانہ کھاٸیں ، جب اس کے پاس کوٸی گاہک نہ ہوتا تھا تو بیوی پر بڑبڑاتا ، کم بخت نے پانی بھی ذیادہ ڈالا ہے. چمچے سے سالن لیکر چیک کرتا اور کہتا ہاٸے ہاٸے زہر اتنا تیز نمک اور مرچ ، ایسے میں کوٸی گاہک آتا تو ان پر تمہید باندھتا ، یاد کروگے درگاہی کو ، سامنے والے…

قران پاک میں ہندی الفاظ کا زکر ۔ زریں تارڑ

عام طور پر یہ خیال کیا جاتا ھے کہ آغاز اسلام کے وقت بر صغیر پاک و ھند کا خطہ عربوں کیلیے اجنبی علاقہ تھا ۔ عرب ہندووں کیلیے اجنبی قوم تھی۔ یہ غلط فہمی ھے جسے بعض اسلام دشمن مورخوں اور مصنفوں نے فروغ دیا اور یہ ظاہر کرنے کی کوشش کی ھے کہ اسلام بر صغیر میں مسلمان حملہ اوروں کے ذریعے پھیلا ۔ حقیقت اسکے بر عکس ھے . عرب و ھند کے تعلقات ہزاروں سال پرانے ھیں ۔مکہ اس دور کا بڑا تجارتی و مذھبی مرکز…

آہ کیمرہ مین محمد ںاصر

کہنے کو ملک کے سب سے بڑے میڈیا ہاوس میں کیمرہ مین تھا مگر اپنی موت کے وقت اس نے ہماری اجتماعی بے حسی, خود غرضی اور خود نمائی کو ننگا کر دیا, صحافتی سیٹھ نے ورکرز کا لہو نچوڑنا ہے جب لہو نچوڑ لیا جائے تو کارکن صحافی کی وقت ختم سمجھو یہی کچھ جیو گروپ نے کیا.صحافت ملک کا چوتھا ستون ضرور ہے آئین پاکستان کے تحت ازادی اظہار رائے بھی اسی طرح میسر ہے جس طرح سیگریٹ کے ڈبیا پہ وارننگ پرنٹ ہوتی ہے نہ تو صحافیوں…

چلتے ہو تو چین کو چلیئے ، محمد جاوید مرزا

چلتے ہو تو چین کو چلیے —- تحریر۔ محمد جاوید مرزا وزیرآعظم عمران خان آج کل چین جا کر چینیوں کو بتا رہے ہیں کہ چین نے کیسے ترقی کی ھے اس بات پر ہر چینی کی چھوٹی چھوٹی آنکھیں تشکر کے آنسووں سے نمناک ہیں اور شنید ھے کہ پاکستانی حکومت کی پچھلی دانشمندی جس میں سی پیک کو ناپسند فرماتے ہوے کام روک دیا گیا تھا اب اس سے یو ٹرن لیکر چینی حکومت اور کمپنیوں سے دوبارہ پاکستان میں سرمایہ داری کی درخواست کی جا رہی ھے…

فوج ترکی کے تجربہ سے خوفزدہ تھی ؟ کاشف حسین

جولائی 2016 کو ترکی کی مسلح افواج کے ایک دھڑے نے جمہوری حکومت کے خلاف بغاوت کر دی۔ اس دھڑے نے فوج کی ہائی کمان کو یرغمال بنانے کے بعد استنبول اور انقرہ کی متعدد اہم تنصیبات پہ قبضہ کر کے حکومت کا تختہ الٹنے کا اعلان کردیا۔ صدارتی محل اور پارلیمنٹ پہ بمباری کی گئی۔ اس کاروائی میں دس ہزار سے زائد باغی افسروں اور جوانوں نے 24 جنگی طیاروں، 37 ہیلی کاپٹروں، 74 ٹینکس، 246 بکتر بند گاڑیوں اور 3 بحری جہازوں کے ساتھ حصہ لیا جس سے…

مردانگی غیرت اور آصف علی زرداری ۔ معاذ چوہدری

مردانگی، غیرت اور آصف زرداری: میرا مسئلہ • سکہ رائج الوقت تہذیب یعنی غالب تہذیب کا اعلیٰ ترین مظہر ایک جوان سفید فام خاتون ہے۔ غالب تہذیب کے زیادہ تر چشمے اسی کی زندگی کے مختلف پہلوؤں سے پھوٹتے ہیں۔ یہ نئی تہذیب ہم سے چاہتی ہے کہ دنیا کے خطے میں پائی جانے والی ہر خاتون اس کی زندگی کی اپنانے کی کوشش کرے یا بالکل اس جیسا بننے کی کوشش کرے اور ہر مرد یا تو اس کو حاصل کرنے کی کوشش کرے یا اس کو حاصل کرنے…

وزیراعظم نے پھر سبکی کرا دی ۔

سفارتی آداب سے نابلد چنتخب وزیراعظم نے بیجنگ میں پاکستان کی پھر سبکی کرا دی ۔ چینی وزیراعظم کے ساتھ پاکستانی وفد کی ملاقات کے دوران وزیراعظم کو سفارتی پروٹوکول کے مطابق چینی وزیراعظم کے ساتھ ہونا چاہیے تھا اور اپنے وفد کے اراکین سے تعارف کرانا چاہیے تھے ، پاکستانی وزیراعظم چینی وزیراعظم کی پاکستانی وفد سے ملاقات کے دوران پیچھے ہٹ گئے اور تعارف کے دوران وہاں منڈلاتے رہے اور چینی وزیراعظم اکیلئے ہی پاکستان وفد سے خود تعارف حاصل کرتے رہے ۔ چیف اف آرمی سٹاف جنرل…

مولوی طارق جمیل کو خواب میں حور نظر آئی ۔

مولوی طارق جمیل کو خواب میں اللہ تعالی نے جو حور دکھائی مولوی صاحب اس کے حسن کو بیان کرنے کی طاقت نہیں رکھتے ۔ عوام کو ستر فٹ کی حوروں کے بعد مولوی صاحب نے حوروں کے متعلق ایک نیا بیان جاری کیا ہے جو پہلے والے بیان سے قدرے مختلف ہے کیونکہ اس میں حور کے بہت لمبے قد کا زکر نہیں ہے ۔ مولوی کہتا ہے یہ حور اس قدر حسین تھی کہ دنیا کا کوئی شخص اس کی تاب نہیں لا سلتا کیونکہ وہ بھی اس…