معاشی تباہی ہمہ گیر ہے ۔ کامران طفیل

رکھیو غالبؔ مجھے اس تلخ نوائی میں معاف آج کچھ درد مرے دل میں سوا ہوتا ہے آج کا دن کافی ڈپریس ہوا ہوں،پانچ میٹینگز تھیں،جن میں دو حضرات ملازمت پیشہ تھے،دو کاروباری اور ایک سروس پروائیڈر یعنی آرکیٹیکٹ۔ پہلے کاروباری شخص سے بات شروع ہوئی تو گفتگو میں ان کی آنکھیں نم ہوگئیں،فرمانے لگے کہ اس ایک سال میں اپنا تمام سرمایہ ختم کرچکا ہوں اور ادھار تلے دب گیا ہوں،ایسی کسمپرسی کا کبھی سوچا بھی نہیں تھا،ہم نے کیا سوچا تھا اور کیا ہوگیا ہے،میں جانتا تھا کہ…

انشاجی اٹھو اب کوچ کرو ۔ نذیر ڈھوکی

خود غرضی ، جھوٹی انا اور تعصب کی بیماری دل اور دماغ پر ایسی چھاٸی کہ خود کو ملک کا وزیر اعظم سمجھنے کی بجاٸے بادشاہ سمجھنے لگے جبکہ حقیقت میں منتخب نہیں چنتخب تھا ۔ ایک سال کے دوران ہی الیکٹڈ اور سلیکٹڈ کے فرق کو پوری قوم کے سامنے واضح کر دیا . اگر ان میں رتی برابر عقل ہوتی تو چیٸرمین پیپلز پارٹی کی قومی اسمبلی میں تقریر سے رہنماٸی حاصل کرتے ، انہیں تو پیپلز پارٹی کی قیادت کا احسان مند ہونا چاہیٸے تھا اپوزیشن جماعتیں…

کیپٹن صفدر کو گرفتار کر لیا گیا ۔

نواز شریف کی علالت پر شدید مشتعل ان کے داماد کیپٹن صفدر کو گرفتار کر لیا گیا ہے ۔ وہ کارکنوں کے ہمراہ سروسز ہسپتال جا رہے تھے کہ پولیس نے انکی گاڑی کو روکا اور کیپٹن صفدر کو گرفتار کر لیا ۔ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو راوی ٹول پلازہ کے قریب پنجاب پولیس کی بھاری نفری نے روکا اور انہیں گرفتار کر لیا ۔ بتایا جا رہا ہے کہ نواز شریف کے داماد کو اشتعال امیز تقریر پر گرفتار کیا گیا ہے ۔مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب…

آزاد کشمیر کا محمد رشید زمیندار ایک حیرت انگیز کردار۔

محمد رشید زمیندار۔۔۔کی کہانی۔۔۔تحریر عابد صدیقجب آپ کسی نوجوان کو کہیں کہ آپ نوکری چھوڑ کر”کھیتی باڑی“ کیوں نہیں کرتے تومنہ پر نہ سہی لیکن پیٹھ پیچھے وہ ضرور کہتا ہو گا کہ ”پاگل ہے یہ مفت میں تنخواہ مل رہی ہے یہ کس چکر میں ڈالنے لگا ہے“۔پھر بغیر کوئی تجربہ کیے ہم اپنے طور پر یہ فیصلہ کر چکے ہوتے ہیں کہ زمینوں سے کچھ نہیں اگتا۔ایسے ہی وقت ضائع کرنے والی بات ہے۔اور اب تو موسم ہی بدل گے ہیں۔اب تو زمینیں بنجر ہی ٹھیک ہیں۔ میری…

موجودہ حکومت پاکستان کیلئے بھیانک خواب ہے ، صولت پاشا

خان کی حکومت ان چودہ پندرہ مہینوں میں جس طرح ہر محاذ پر ناکامی سے دوچار ہوئی ہے شاید ہی پاکستان کی کوئی اور حکومت اس بری طرح نا کام ہوئی ہو ، اس سے خان کے ووٹروں میں مایوسی پھیلتی جا رہی ہے..ایک طبقہ تو بلکل مایوس ہو چکا دوسرے کو لگتا ہے کہ خان کواہل اور اچھی ٹیم نہ مل سکی ورنہ خان کی نیت درست تھی جبکہ ایک گروہ ایسا ابھی تک موجود ہے جسکو امید ہے کہ فوج جس طرح خان کے ساتھ ہے اگر اسی…

نواز شریف نیم بہوش ہیں ۔

خون میں پلیٹلیٹس کی تعداد خطرناک حد تک کم ہونے کی وجہ سے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کی حالت ٹھیک نہیں ،سابق وزیراعظم پر شدید نقاہت اور نیم بہوشی طاری ہے انہیں ہنگامی طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا ہے جہاں ماہر ڈاکٹروں کی ٹیم ان کا معائنہ کر رہی ہے ۔قبل ازیں سابق وزیراعظم نقاہت کے باوجود خود گاڑی میں سوار ہوئے اور ہسپتال پہنچنے کے بعد بھی اپنے قدموں پر چل کر اندر گئے ۔ سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف اور کیپٹن صفدر نواز شریف کی تفتیش…

نیب آفس لاہور کے باہر کارکنوں کا احتجاج۔

نیب اہلکاروں کی طرف سے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف سے تفتیش کے دوران انکی حالت غیر ہونے کی خبرین پھیلنے کے بعد رات کو مسلم لیگ ن کے کارکن نیب آفس کے باہر جمع ہو گئے ، کارکن شدید نعرہ بازی کر رہے تھے اور سابق وزیراعظم کی رہائی کا مطالبہ کر رہے تھے ۔ کارکن بڑی تعداد میں جمع ہو کر نعرے بازی کر رہے تھے ۔ ظالموں حساب دو ظلم کا جواب دو ظلم کے ضابطے ہم نہیں مانتے نواز شریف کو رہا کرو

“جنگوں کے نئے انداز “

احتشام الحق شامی ۔ ترجمان دفترِخارجہ نے آج پھر پریس بریفنگ میں کہا ہے کہ” جنگ نہیں چاہتے لیکن مسلط کی گئی تو بھرپور جواب دیں گے” اِس ملک کے پالیسی سازوں کو شائد ابھی بھی اس بات کا یقین نہیں آ رہا کہ وہ زمانے گئے جب ممالک میں جنگیں پرانے اور روائتی طریقوں سے ہوا کرتی تھیں ، زمانے کے ساتھ اَب جنگوں کے طور طریقے بھی بدل گئے ہیں ،اس وقت دنیا بھر میں میڈیا یا سائبر وار ، معاشی ،اقتصادی اور سفارتی جنگیں لڑی جا رہی…

نواز شریف کی جان کو خطرہ ؟

سابق وزیراعظم میں نواز شریف کی زندگی کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں ۔ان کے خون میں پلیٹیلٹ کی تعداد خطرناک حد تک اچانک کم ہو گئی ہے ۔میاں نواز شریف کے بیٹے حسین نواز نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ انہیں زہر دیا گیا ہے جو کسی بھی طریقہ سے دیا جا سکتا ہے ۔ میاں نواز شریف جو ملک کے تین مرتبہ وزیراعظم رہ چکے ہیں ان کی ایک اور مقدمہ میں گرفتاری کے وقت خدشہ ظاہر کیا گیا تھا کہ میاں نواز شریف کی زندگی کو…

بھنگ کا کاروبار اور لندن کا پاکستانی ۔ہارون ملک

ایک دلچسپ قِصہ یاد آیا ؛ تقریباً سات سال پہلے میرا ایک دوست بلکہ واقف کار تھا جِس کا نام ہم رضوان فرض کرلیتے ہیں ، رضوان کا تعلق میرپور سے تھا ۔ رضوان دِن کے زیادہ تر اوقات میں میرے پاس دُکان پر آتا اور بیٹھا گپیں لگاتا رہتا ۔ میں اکثر حیران ہوتا تھا کہ بھئی یہ بندہ تو دِن رات جب دیکھو کہیں نہ کہیں نظر آہی جاتا ہے تو کماتا کہاں سے ہے ؟ سوشل بینیفٹس لینے کی صُورت میں بھی وُہ اپنا سوشل سٹیٹس اور…